بڑی مدت کے بعد

بوریت کا مارا، دنیا کا جیالا اور خوابوں کا شکاری کدھر جاۓ . اگر اس کا باجا ٹوٹ جاۓ، دنیا چھوٹ جاۓ اور شکار روٹھ جاۓ. بس دوستو میرا آج کل یہی حال ہے. کیا بتاؤں کیسے جینا محال ہے. محسن نقوی اور مجھ میں ایک بات مشترک ہےکہ  اسے دوستوں سے شکایت تھی اور مجہے بھی انہی سے سے گلہ ہے. چنانچہ اب میں اور محسن کی “رداۓ خواب ”  اکٹھے پاۓ جاتے ہیں.  

Advertisements

2 thoughts on “بڑی مدت کے بعد

  1. یاروں سے شکوے کی وجہ؟
    کوئی “مزید کمینگی” کری انہوں نے
    اور دوسروں کی رداؤں کے ساتھ پایا جانا بڑی معیوب بات سمجھی جاتی تھی محسن کے زمانے میں
    شکر ہے وہ بیچارہ یہ دن دیکھنے سے پہلے ہی ٹیں پٹاس ہو گیا؟

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s